کپتان ذرا تو بھی سُن

0

کپتان ذرا تو بھی سُن، پرویزالہٰی گانے لگے زرداری حکومت کے گنُ،،،سپیکر پنجاب اسمبلی نے وزیراعظم کو اتحادیوں پر شک کرنے کےبجائے بات کی تصدیق کرنے کا مشورہ دے دیا،پنجاب کے مسائل کی ذمہ داری عثمان بزدار پر ڈال دی

سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویزالہٰی نے وزیراعظم عمران خان سے شکوہ کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم اتحادیوں کو شک کی نگاہ سے نہ دیکھیں جوبات ہوپہلے تصدیق کیا کریں،مذاکرات کےذریعے فضل الرحمان سے دھرنا ختم کرایا لیکن حوصلہ افزائی کی جگہ الٹا ہم پر شک کیا گیا تاہم سابق صدر آصف زرداری کےساتھ مخلوط حکومت کا تجربہ بہت اچھا رہا۔

پرویز الٰہی کاکہنا تھا کہ عمران خان ملک کیلئےکچھ کرناچاہتےہیں لیکن وہ کس کے ساتھ مل کر چلنا چاہتےہیں یہ بڑا سوال ہے،،اگر حکومتی ٹیم اچھی نہیں تو یہ عمران خان کیلئے لمحہ فکریہ ہے حکومت کو ڈیڑھ سال ہوگیا ہے وزیراعظم کو سوچنا ہوگا۔

پنجاب کے مسائل پر پرویز الہیٰ کا کہنا تھا کہ وزیراعلیٰ عثمان بزدار کوسمجھایاتھاکہ پنجاب میں انتظامی تبدیلیاں نہ کریں اس کے علاوہ میں نےانہیں مشورہ دیا کہ سندھ کی گندم پنجاب آنےدیں لیکن انہوں نے میرے مشوروں کو نظرانداز کردیا ۔۔۔ سپیکر پنجاب اسمبلی نے کہا کہ نچلی سطح پرحکومت کا کنٹرول نہیں ہے، پنجاب کی تقسیم کے حق میں نہیں ہیں، صوبے میں مسائل ہیں تو کسی حد تک قصور عثمان بزدار کا بھی ہے۔

سپیکر پنجاب اسمبلی کا کہناتھاکہ مسلم لیگ ن کے ساتھ پنجاب حکومت بنانے کی کوئی بات نہیں ہوئی،ن لیگ نوازشریف کے بغیر کچھ نہیں کیونکہ سیاست اور ووٹ نوازشریف کے ہیں جبکہ شہبازشریف کے اختیار میں کچھ نہیں اور نوازشریف چاہتے ہیں کہ مستقبل میں سیاسی باگ ڈور مریم نواز سنبھالیں۔

جواب دیجئے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: