منرل واٹر میں منرلز ہیں بھی یا نہیں

زیر زمین پانی نکال کر منرل واٹر بنانے والی کمپنیوں سے متعلق ازخود نوٹس کی سماعت عدالت نے نیسلے سمیت تمام بڑی کمپنیوں کے سی ای او کل صبح گیارہ بجے طلب کر لیا،،،

چیف جسٹس پاکستان کی سربراہی میں 2 رکنی بنچ نے سماعت کی،،، چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ دیکھنا ہو گا کہ منرل واٹر میں منرلز ہیں بھی یا نہیں ،،، یہ کمپنیاں حکومت کو 25 پیسے فی لیٹر ادا کر کے 50 روپے فی لیٹر پانی فروخت کر رہی ہیں،،،چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ میں گھر میں خود نلکے کا پانی ابال کر پیتا ہوں کیونکہ میری قوم یہ پانی پی رہی ہے،،، جن لوگوں نے اب ڈیم کو روکنے کی کوشش کی ان کے خلاف آرٹیکل 6 کارروائی کروں گا چیف جسٹس کا مزید کہنا تھا کہ پانی اب سونے سے بھی زیادہ مہنگا ہے ،،،پانی کی ڈکیتی کسی صورت نہیں ہونے دیں گے

You might also like

Comments are closed.