غریب ملک کے امیر حکمران

غریب ملک کے امیر حکمران

پنجاب میں 8ہزار975 کنال پر 403 ارب کے سرکاری بنگلے
ملازمین کی فوج کےہمراہ اعلیٰ افسران کےسرکاری گھروں میں مزے
غریب ملک کے امیر حکمران، پنجاب میں 8ہزار 975کنال اراضی پر 403 ارب 11 کروڑ روپے کےعالیشان سرکاری بنگلے قائم، ملازمین کی فوج کے ہمراہ اعلیٰ افسران سرکاری گھروں میں مزے اڑا رہےہیں۔
غریب عوام کے ٹیکس پرسرکاری افسران اب بھی انگریز دور کی طرح زندگی بسر کر رہےہیں۔ اعلیٰ افسروں کے زیراستعمال 104 کنال تک کے وسیع وعریض بنگلوں کی دیکھ بھال اور دیگراخراجات پر سرکاری خزانے سے سالانہ 10 ارب روپے خرچ کئےجارہےہیں۔ ایک سرکاری بنگلےپر10سے52 ملازمین تعینات ہیں جبکہ پنجاب بھرکی رہائشگاہوں میں 19 ہزار 278 ملازمین ڈیوٹی ادا کر رہے ہیں جن کو تنخواہوں اور الاؤنسز کی مد میں سالانہ 5 ارب 12 کروڑ 67 لاکھ روپے ادا کئے جاتے ہیں۔ ملازمین کی فوج ظفرموج کے ساتھ رہنے والے افسران کی رہائشگاہوں کی تزئین و آرائش پر سالانہ 5 لاکھ سے 15 لاکھ روپے خرچ ہوتے ہیں۔ سرکار کو ایک افسر ماہانہ دس سے 55 لاکھ روپے میں پڑتا ہے جبکہ ایک صوبائی وزیر پر 23 لاکھ روپے ماہانہ اور سالانہ 2 کروڑ 76 لاکھ روپے خرچ کئے جا تے ہیں۔ صرف لاہور میں 5026 کنال سے زائد اراضی کی سرکاری رہائشگاہوں پر افسران عوام کے ٹیکس پر مزے اڑا رہے ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہےکہ پنجاب میں کئی افسران کو سابق وزیراعلیٰ نے میرٹ کے برعکس سرکاری بنگلے الاٹ کئے۔

You might also like

Comments are closed.