نو ٹائم ٹو سلیپ

نو ٹائم ٹو سلیپ

سنیئر اداکار عرفان کھوسٹ اور سرمد کھوسٹ کی ’’نو ٹائم ٹو سلیپ‘‘میں لاجواب اداکاری نے شائقین کے دل جیت لئے۔ تفصیل کے مطابق پاکستان کی تاریخ کی پہلی چوبیس گھنٹے طویل لائیو پرفارمنس ’’نو ٹائم ٹو سلیپ‘‘گذشتہ روز آن لائن موبائل فونز اور کمپیوٹر لاکھوں لوگوں کو دکھائی گئی ۔ جس میں سرمد کھوسٹ نے سزائے موت کے قیدی کا کردار نبھایا جبکہ ان کے حقیقی والد عرفان کھوسٹ ہی اس کھیل میں بھی ان کے والد کا کردار کیا۔ جسٹس پراجیکٹ پاکستان ،ہائی لائٹ آرٹس یوکے اور اولوپولو میڈیا کے تعاون سے پیش کئے جانیوالی اس لائیو سٹریم پرفارمنس کی ہدایتکارہ کنول کھوسٹ نے بتایا کہ یہ کہانی سزائے موت کے قیدی ذوالفقار علی کے آخری چوبیس گھنٹوں پر مشتمل تھی جس میں جیل کے حقیقی ماحول اور سزائے موت کے قیدیوں کی حالت زار کی بھرپور عکاسی کی گئی ۔انہوں نے کہا کہ پاکستان سمیت پوری دنیا میں بیک وقت سوشل میڈیا پر دکھائی جانیوالی اس لائیو پرفارمنس میں اداکار سرمد کھوسٹ ، عرفان کھوسٹ ، سرفراز انصاری اور عثمان ضیاء کی پرفارمنس کو بے حد پسند کیا گیا۔ کنول کھوسٹ نے کہا کہ اس کھیل کا مقصد سزائے موت کیخلاف عالمی دن کے موقع پر اس سزا کے خلاف شعور اجاگر کرنا تھا۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس پراجیکٹ کی کامیابی کا کریڈٹ پوری ٹیم کو جاتا ہے

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.