شام میں خانہ جنگی کے باعث 6 سال تک بند رہنے والے نیشنل میوزیم کا کچھ حصہ عوام کے لیے دوبارہ کھول دیا گیا

شام میں خانہ جنگی کے باعث 6 سال تک بند رہنے والے نیشنل میوزیم کا کچھ حصہ عوام کے لیے دوبارہ کھول دیا گیا

شام میں خانہ جنگی کے باعث 6 سال تک بند رہنے والے نیشنل میوزیم کا کچھ حصہ عوام کے لیے دوبارہ کھول دیا گیا۔برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق شامی وزیر ثقافت محمد الاحمد نے کہا ہے کہ عجائب گھر کا دوبارہ کھلنا یہ پیغام دیتا ہے کہ ملک کی ثقافتی ورثہ دہشت گردی سے تباہ نہیں ہوا ہے۔عجائب گھر کا صرف ایک حصہ عوام کے لیے کھولا گیا ہے تاہم عجائب گھر کے ڈپٹی ڈائریکٹر احمد دیبکا کہنا ہے حکام پورے عجائب گھر کو دوبارہ کھولنے کے حوالے سے کام کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم قبل از تاریخ، قدیم مشرقی اور کلاسیکل اور اسلامی ادوار تک تمام ادوار کے نواردرات اس حصے میں نمائش کے لیے پیش کریں گے۔دمشق میں واقع دنیا کا یہ معروف عجائب گھر 2012 ء میں بند کر دیا گیا تھا تاکہ یہاں رکھی گئی پیش قیمت نوادرات کو محفوظ رکھا جا سکے۔تحفظ کے پیش نظر بہت سارے نوادرات کو یہاں سے ایک خفیہ مقام منتقل کر دیا گیا تھا۔عجائب گھر دوبارہ کھولنے کا فیصلہ ایک وقت میں کیا گیا ہے جب شامی حکومت حالات کو دوبارہ معمول پر لا رہی ہے۔ رواں سال کے آغاز میں صدر بشار الاسد کی افواج نے دارالحکومت پر مکمل طور پر اپنا کنٹرول سنبھال لیا تھا تاہم ملک کے کچھ حصوں اب بھی لڑائی جاری ہے۔

You might also like

Comments are closed.