مولانا سمیع الحق کے بہیمانہ قتل کی تفتیش میں اہم پیش رفت

قتل میں دہشت گردی کا سراغ نہیں ملا

خیال کیا جا رھا ھے کہ مولانا کو زاتی رنجش پر قتل کیا گیا ، مولانا کے ذاتی خدمت گار نے اہم ترین معلومات فراہم کیں بین الاقوامی سازش کا امکان رد قتل کی تفتیش کاوئنٹر ٹیٹرازم ڈیپارٹمنٹ نے راولپنڈی پولیس کے حوالے کردی کیونکہ دھشت گردی کے شواہد نہیں ملے۔

معلومات سے قتل میں دہشت گردی کا کوئی پہلو سامنے نہیں آیا ۔۔۔ قوی امکان ھے کہ مولانا سمیع الحق کا قتل نجی معاملات اور زاتی رنجش کا نتیجہ ہے اور اس حوالے سے قاتل کی گرفتاری جلد متوقع ھے۔۔

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.