مدیحہ گوہر کی یاد میں تقریب, نور الحسن کی میزبانی

فیصل آباد لٹریری فیسٹیول میں پاکستان کی نامور تھیٹر ڈائریکٹر مدیحہ گوہر(مرحوم) کی فنی خدمات کے اعتراف میں پروقار تقریب

معروف کمپیئر نور الحسن نے تقریب کی میزبانی کی جبکہ شاہد محمود ندیم ، سویرا ندیم اور نروان ندیم نے اظہار خیال کیا ۔
فیصل آباد آرٹس کونسل میں ہونے والے پانچویں سالانہ لٹریری فیسٹیول میں آخری روز پاکستان کی معروف فنکارہ ، تھیٹر اور ہیومن رائٹس ایکٹوسٹ مدیحہ گوہر کی فنی خدمات کے اعتراف میں خصوصی سیشن کا انعقاد کیا گیا جس میں عہد حاضر کے نامور ادیبوں اصغر ندیم سید، کشور ناہید، زاہدہ حنا، حارث خلیق اور پاکستان نیشنل کونسل آف آرٹس کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر جمال شاہ سمیت آرٹ اور تھیٹر کے قدر دانوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی ۔ پروگرام کے دوران مدیحہ گوہر کی شخصیت اور فنکارانہ کیرئیر کے مختلف پہلوؤں کے بارے میں تفصیلی گفتگو کی گئی ۔مقررین کا کہناتھا کہ مدیحہ گوہر نے تھیٹر کو شائقین کو معیاری تفریح فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ سماجی آگاہی کے میڈیم کے طور پر استعمال کیا اور انسانی حقوق بالخصوص حقوق نسواں کی علمبرداری کے حوالے سے شاہکار کھیل پیش کئے ۔ مدیحہ گوہر نے اپنے اصولوں پر سمجھوتا کئے بغیر ہرمشکل کا سامنا جوانمردی سے کیا اور دیگر فنکارو ں کیلئے رول ماڈل کے طور پر سامنے آئیں۔مقررین کا مزید کہنا تھا کہ اجوکا تھیٹر مدیحہ گوہر کے شروع کردہ مشن کو اسی جذبے کے ساتھ جاری رکھتے ہوئے سماجی موضوعات پر سبق آموز کھیل پیش کرنے کا سلسلہ جاری رکھے گا۔ پروگرام کے آخر میں حاضرین کی بڑی تعداد نے زور دار تالیوں سے مدیحہ گوہر کی فنی خدمات کو خراج تحسین پیش کیا

You might also like

Comments are closed.