وزیر اطلاعات و ثقافت پنجاب کا لاہور کالج خواتین کا دورہ

وزیر اطلاعات و ثقافت پنجاب کا لاہور کالج خواتین کا دورہ

صوبائی وزیر اطلاعات و ثقافت فیاض الحسن چو ہان نے کہا ہے کہ مولانا جلال الدین رومی تصوف کی معراج ہیں۔ وہ ایک تاریخی ہستی ہیں۔ ہمارے شاعر مشرق ڈاکٹر علامہ اقبال بھی مولانا کے فلسفہ تصوف سے بہت متاثر تھے۔ میں یہ سمجھتا ہوں کہ تصوف یہ نہیں ہے کہ آپ سرمیں خاک ڈال کر صحرا میں نکل جائیں۔صوفیت درحقیقت انسان کا اپنی خودی کو پہچاننا ہے۔ مولانا رومی کا کلام ہمیں دراصل ایسے ہی تصوف کا پیغام دیتا ہے۔
ان خیالات کا اظہار صوبائی وزیر نے آج لاہور کالج برائے خواتین یونیورسٹی کے شعبہ فارسی کے زیر اہتمام معروف صوفی شاعر مولانا جلال الدین رومی کے یوم وصال کے سلسلے میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ مولانا رومی کی شخصیت فارسی علم و ادب کی باکمال شخصیت ہے۔ ان کی شاعری اور ہستی تقریبا آٹھ سو سال گزرنے کے باوجود آج بھی صوفی ازم کا بہترین نمونہ ہے۔ مولانا کے افکار پر عمل کر کے ہم ایک ایسی دنیا کو وجود میں لا سکتے ہیں جہاں صرف امن اور سلامتی ہو۔
مولانا رومی کے کلام میں دلچسپ بات یہ ہے کہ یوم وفات کو یوم وصال کا نام دیا گیا ہے۔ کیونکہ ان کا یہ مانناہے کہ عظیم شخصیات کبھی مرتی نہیں ہیں۔ ان کی وفات درحقیقت ان کا اپنے رب سے وصال ہوتا ہے۔ مولانا جلال الدین رومی کی خاصیت یہ ہے کہ ان کا کلام کسی ایک قوم یا مذہب کے لیے نہیں ہے بلکہ تمام عالم کے لیے ہے۔
اس موقع پر وائس چانسلر لاہور کالج برائے خواتین ڈاکٹر فرخندہ منظور، ایرانی قونصل جنرل Reza Naziri، ڈائریکٹر جنرل ایرانی کلچر سنٹر Rezai Fard، اور ہیڈ آف فارسی ڈیپارٹمنٹ ڈاکٹر فلیحہ زہرہ کاظمی اور فیکلٹی اور طالبات کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔
ڈاکٹر فرخندہ منظور اور ڈاکٹر فلیحہ کاظمی نے صوبائی وزیر اور ایرانی قونصل جنرل کا شکریہ ادا کیا۔ اس موقع پر مولانا رومی کے افکار اور کلام پر مبنی ڈاکیومنٹری بھی دکھائی گئی اور سماں رقص کا بھی مظاہرہ کیا گیا۔

You might also like

Comments are closed.