دلچسپ وعجیب

ہربھجن سنگھ کی جانب سے عالمگیر وبا کورونا وائرس کی ویکسین پر تبصرہ کر نا مہنگا پڑگیا ، سوشل میڈیا پر صارفین برس پڑے

بھارتی کرکٹر ہربھجن سنگھ کی جانب سے عالمگیر وبا کورونا وائرس کی ویکسین پر تبصرہ کر نا مہنگا پڑگیا ، سوشل میڈیا پر صارفین برس پڑے ۔ تفصیلات کے مطابق بھارتی کرکٹر نے حال ہی میں ایک ٹوئٹ کیا جس پر سوشل میڈیا صارفین کی جانب سے انہیں شدید تنقید کا نشانہ بنایاگیا ۔ بھارتی کرکٹر ہربھجن سنگھ نے اپنے ٹوئٹ میں کورونا وائرس کی ویکسیز کا موازنہ کیا اور لکھا کہ فائزر اور بائیوٹیک ویکسین 94 فیصد، موڈرنا 94.5 فیصد ، آکسفورڈ کی کورونا ویکسین 90 فیصد تک مؤثر ہے۔انہوں نے اپنے ٹوئٹ میں مزید یہ لکھا کے انڈیا میں کورونا ویکسین کے بغیر وائرس سے صحتیابی کی شرح 93.6 فیصد ہے، کیا ہمیں واقعہ کورونا کی ویکسین کی ضرورت ہے؟اس ٹوئٹ پر بھارتی کرکٹر ہربھجن سنگھ کو سوشل میڈیا صارفین نے خوب تنقید کا نشانہ بنایا ایک ٹوئٹر صارف نے ہربھجن سنگھ کی ٹوئٹ پر تبصرہ کیا کہ 93.6 فیصد صحت یابی کا مطلب یہ کہ 6.4 فیصد لوگوں کی اموات ہو رہی ہے جب کہ 95 فیصد مؤثر ویکسین کا مطلب ہے کہ 95 فیصد لوگ ان 6.4 فیصد مرنے والے لوگوں میں شامل ہونے سے بچ سکتے ہیں۔انہوں نے لکھا کہ علاوہ ازیں صحتیابی کے جسمانی اور دماغی مضر اثرات بھی مرتب ہوتے ہیں اور آپ کی ٹوئٹ دیکھنے کے بعد یہ لگتا ہے کہ آپ جیسے لوگوں کو سب سے زیادہ ویکسین کی ضرورت ہے ۔پرابھا نامی صارف نے کہا کہ ان ایک لاکھ 40 ہزار جانوں کے ضیاع کے بارے میں کیا خیال ہے؟ایک اور صارف نے کہا کہ صرف ایک بیٹسمین کرکٹ پچ پر مرا ہے، تو کیا واقعی ہمیں ہیلمٹ، کڈنی گارڈ، چیسٹ گارڈ اور شن گارڈ پہننے کی ضرورت ہے؟۔نیرج راج نے کہا کہ آپ وہی ہیں جو کورونا وائرس کے علاج کے لیے دھنیا، پودینا، املی اور کھٹائی جیسی چیزوں کی حمایت کرتے ہیں۔
٭٭٭٭٭

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: