بین الاقوامی

عرعر کی سرحدی گزر گاہ سرمایہ کاری کا اہم راستہ ہے ، سعودی عرب میں عراقی سفیر

Bolti News

سعودی عرب میں عراق کے سفیر قحطان طہ خلف نے باور کرایا ہے کہ عرعرکی سرحدی گزر گاہ شہہ رگ کی حیثیت رکھتی ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق اپنے بیان میں قحطان کا کہنا تھا کہ عرعر کی گزر گاہ عراق میں سعودی سرمایہ کاری داخل ہونے کا راستہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ برادر ممالک کے ساتھ تعلقات ہمارے لیے قابل اعزاز ہے ،عراق کو اس کے عرب تشخص سے علاحدہ نہیں کیا جا سکتا۔واضح رہے کہ سعودی عرب اور عراق کے درمیان سرحدی پٹی 830 کلو میٹر طویل ہے۔ اس پر فولادی باڑ لگی ہوئی ہے جب کہ سرحد اور اس کے آس پاس کی نگرانی کے لیے جدید برقی ٹکنالوجی کا استعمال کیا جاتا ہے۔ اسی وجہ سے دونوں ملکوں کے درمیان اسمگلنگ کا تناسب 100% کے قریب تک کم ہو گیا ہے۔
٭٭٭٭٭٭

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: